آج کی آیت پر خیالات

جیسے ہم خُدا کی حمد کرتے ہیں، جیسے ہم اپنی زندگی کے اُن تمام دنوں کے لیے خُداکوجلال بخشنے کے لیے اپنے اعتراف کا احترام کرتےہیں، یہ بہت سادہ ہے: ہم آج یہ کرتے ہیں۔ جب تک کہ آج ہم خُدا کی حمد کرتے ہیں،اِس سے اُس کی ہمیشہ دیکھ بھال ہوتی ہے۔ چنانچہ جیسا کہ آپ خُدا کے نام کو بُلندکرنے اور تمام تر ابدیت کے لیے اُس کی حمد کرنے کےلیے عہد کرتے ہیں۔ وہ جگہ یاد درکھیں جہاں سے یہ شروع ہُوا ہے: آج خُدا کی حمد کرو—ناکہ اُن چیزوں میں جو کہ تم کہتے ہو بلکہ جیسے تم جیتے ہو اُس میں بھی۔

میری دعا

قادر خُدا اور زندہ باپ، میں آض تُجھے بتانا چاہتا ہوں کہ کتنا شاندار اور حیرت انگیز ہونے کےلیے تُجھ پر بھروسہ کرتا ہوں۔ تُو راستباز، وفادار، پاک اور رحیم ہے۔ تُو مہربان، پیار کرنے والا، اور جلال میں شاندار اور طاقت میں لاجواب ہے۔ تُو نے مجھے میرے گناہ سے چھُڑایا اور میری موت سے آگے مجھے اُمید دی۔ تُو نے میری زندگی کو بہت سے اچھے لوگوں سے بھر دیا اور اپنے ساتھ گھر کا وعدہ کیا۔ تُو، اے خُدا، مرتبہ اور حریف کے بغیر ہے۔ تُو میرا بادشاہ ہے، میرا شاندار اور اچھا باپ۔ یسُوع کے نام میں، آج اور ابدتک تیری حمد کرتا ہوں۔ آمین۔س

آج کی آیت پر دعا اور خیالات فل وئیر لکھتے ہیں

اظہارِ خیال