آج کی آیت پر خیالات

ہمارے پاس اُس لوگوں کی مثالیں ہیں جنہوں نے اپنی دولت کا درست استعمال کیا اور جنہوں نے فیاضی کے ساتھ دُوسروں کو برکت دی اور اِس عمل کے دوران خُدا کو عزت بخشی—وغیرہ، جیسے کہ برنباس اعمال 4 باب میں، دُوسرا کرنتھیوں 8 تا 9 آیت کو بھی دیکھیں اور پہلا تیمتھیس 6 باب 17 تا 18 آیت کو بھی۔ لیکن نیا عہد نامہ بار بار ہمیں دولت کی خواہش کے بارے میں تنبیع کرتا ہے۔ نہ چاہتے ہوئے بھی ، یہ خواہش ہمارا معبود بن سکتی ہے اور ہمیں بربادی کی طرف لے جا سکتی ہے (پہلا تیمتھیس 6 باب 9 تا 10 آیت)۔ یہ مکمل طور پر بتوں کی پوجا ہو سکتی ہے(کرنتھیوں 3 باب 5 آیت)۔ دولت کے پیچھے بھاگنا زندگی کو معنی دینے کےلیے ایک بے کار عمل ہے۔ واعظ کی آخری دو آیات میں، عاقل آدمی کہ کہاں اصل معنی تلاش کیے جا سکتے ہیں اور اُس نے پولس کے قول کی تشریح کی، "ہاں دینداری قناعت کے ساتھ بڑے نفع کا ذریعہ ہے"۔(پہلا تیمتھیس 6 باب 6 آیت)۔

میری دعا

قادرِ مطلق اور فیاض باپ، مجھے کثرت سے نوازنے کےلیے تیرا شُکر ہو۔ براہِ کرم میرے دل کو اپنے فیاضی سے معمور کر تاکہ میں اُن لوگوں کےلیے برکت کی پائپ لائن کا کام کروں جو میرے چوگرد ضرورت مند ہیں۔ میرے دل کو لالچ، خود غرضی، اور حسد سے محفوظ رکھ تاکہ میں شُکرگزاری کے ساتھ تحفہ قبول کروں اور مسّرت کےساتھ دُوسروں کے ساتھ اُس کو بانٹوں۔ یسُوع کے نام میں مانگتا ہوں۔ آمین۔

آج کی آیت پر دعا اور خیالات فل وئیر لکھتے ہیں

اظہارِ خیال