آج کی آیت پر خیالات

بُرائیوں کی آواز کی پیروی کرتے ہوئے، دونوں نندی اور عام ہیں، پولُس خُدا کے پُرفضل کلام کوختم کرتا ہے۔ ہم تمام لوگوں میں اُسی جگہ رہنے کی عادت ہے "جہاں ہم رہ چُکے ہوتے ہیں۔ ہم میں سے کُچھ، ماضی کی ہماری کامیابیاں کل کے تکبر میں جینے کےلیے ہمارے لیے بہانہ بن جاتی ہیں۔ پولُس فلپیوں کی کلیسیا کو 3 باب 4 تا 9 آیت میں اِس گروہ کے بارے میں لکھتا ہے۔ ہم میں سے دُوسروں کےلیے ماضی کے زخم اور گناہ ہمارے لیے چٹآنوں کے پتھر بن جاتے ہیں جو کہ ہم باقی زندگی اپنے ساتھ لیے پھرتے ہیں۔ ہم اِن " باسی پتھروں" کو باہر نکالیں اور ایک دفعہ پھر سے اپنے مصائب میں استعمال کریں۔ ہم اُنہیں ثبوت کے طور پر استعمال کرتے ہیں کہ ہم اپنی زندگیوں میں آگے کیوں نہیں بڑھ سکتے۔ کیا شاندار بیداری ہے جو کہ اِس پہرے میں پولُس نے ہمیں دی ہے۔ مسیح میں، کوئی مزید بستے اور کوئی اور چٹانیں نہیں ہیں۔ ہم صاف ہیں! ہم پاک بنائے گئے ہیں۔ ہم کسی بھی غلطی کےلیے معصوم قرار دئے گئے ہیں۔ کیسے؟ کیوں؟ کون؟ یسُوع کی قربانی اور فتح اور رُوح الُقُدس کے قوت بخش کام کی وجہ سے۔

میری دعا

اے باپ، مجھے کل کی تاخیر کے لیے معاف فرما دے، جو میرے آج کو برباد کر رہا ہے، اور میرے آنے والے کل پر بادلوں کی طرح چھایا ہوا ہے۔ اُس زمین میں رہنے کی عادت کےلیے میری مدد فرما "جس کا میں عادی ہوں"۔ مجھے یہ جاننے کےلیے حوصلہ عطا فرما کہ تُو نے میرے ماضی کو الگ مقام پر رکھا ہے اور آج مجھ میں بہت سی نئی چیزیں کرنا چاہتا ہے، شاندار اور بہت شاندار چیزیں جو کہ تجھے اعزاز اور نجات بخشے۔ یسُوع کے نام میں تیرا شُکر ادا کرتا ہوں۔ آمین۔

آج کی آیت پر دعا اور خیالات فل وئیر لکھتے ہیں

اظہارِ خیال