آج کی آیت پر خیالات

بُرائیوں کی آواز کی پیروی کرتے ہوئے، دونوں نندی اور عام ہیں، پولُس خُدا کے پُرفضل کلام کوختم کرتا ہے۔ ہم تمام لوگوں میں اُسی جگہ رہنے کی عادت ہے "جہاں ہم رہ چُکے ہوتے ہیں۔ ہم میں سے کُچھ، ماضی کی ہماری کامیابیاں کل کے تکبر میں جینے کےلیے ہمارے لیے بہانہ بن جاتی ہیں۔ پولُس فلپیوں کی کلیسیا کو 3 باب 4 تا 9 آیت میں اِس گروہ کے بارے میں لکھتا ہے۔ ہم میں سے دُوسروں کےلیے ماضی کے زخم اور گناہ ہمارے لیے چٹآنوں کے پتھر بن جاتے ہیں جو کہ ہم باقی زندگی اپنے ساتھ لیے پھرتے ہیں۔ ہم اِن " باسی پتھروں" کو باہر نکالیں اور ایک دفعہ پھر سے اپنے مصائب میں استعمال کریں۔ ہم اُنہیں ثبوت کے طور پر استعمال کرتے ہیں کہ ہم اپنی زندگیوں میں آگے کیوں نہیں بڑھ سکتے۔ کیا شاندار بیداری ہے جو کہ اِس پہرے میں پولُس نے ہمیں دی ہے۔ مسیح میں، کوئی مزید بستے اور کوئی اور چٹانیں نہیں ہیں۔ ہم صاف ہیں! ہم پاک بنائے گئے ہیں۔ ہم کسی بھی غلطی کےلیے معصوم قرار دئے گئے ہیں۔ کیسے؟ کیوں؟ کون؟ یسُوع کی قربانی اور فتح اور رُوح الُقُدس کے قوت بخش کام کی وجہ سے۔

Thoughts on Today's Verse...

Following a list of vices, both scandalous and common, Paul finishes with this incredible word of grace. We all have a tendency to live in the land of "I-used-to-be." For some of us, our past accomplishments become our excuse to live in the arrogant afterglow of yesterday. Paul wrote Philippians 3:4b-9 for this group. For others of us, the wounds and sins of our past become the bag of rocks we drag with us through the rest of life. We take those "rancid rocks" out and inspect them once again to our misery. We use them as proof of why we can't move on with our lives. What a glorious awakening Paul gives us in this passage. In Christ, there are no more bags and no more rocks. We're clean! We're made holy! We're declared innocent of any wrongdoing. How? Why? Who? The sacrifice and triumph of Jesus and the powerful work of the Holy Spirit.

میری دعا

اے باپ، مجھے کل کی تاخیر کے لیے معاف فرما دے، جو میرے آج کو برباد کر رہا ہے، اور میرے آنے والے کل پر بادلوں کی طرح چھایا ہوا ہے۔ اُس زمین میں رہنے کی عادت کےلیے میری مدد فرما "جس کا میں عادی ہوں"۔ مجھے یہ جاننے کےلیے حوصلہ عطا فرما کہ تُو نے میرے ماضی کو الگ مقام پر رکھا ہے اور آج مجھ میں بہت سی نئی چیزیں کرنا چاہتا ہے، شاندار اور بہت شاندار چیزیں جو کہ تجھے اعزاز اور نجات بخشے۔ یسُوع کے نام میں تیرا شُکر ادا کرتا ہوں۔ آمین۔

My Prayer...

Forgive me, Father, for lingering on yesterdays, ruining my todays, and clouding up my tomorrows. Help me with my tendency to live in the land of "I-used-to-be." Give me the courage to believe that you have put my past in its proper place and want to do a new glorious thing in me today, a glorious and gracious thing that brings you honor and me salvation! In Jesus' name I thank you. Amen.

آج کی آیت پر دعا اور خیالات فل وئیر لکھتے ہیں

Today's Verse Illustrated


Inspirational illustration of پہلا کرنتھیوں 6 باب 11 آیت

اظہارِ خیال