آج کی آیت پر خیالات

خُدا اپنی کسی بھی نعمت سے باز نہیں رہتا! درحیقیت، باپ اپنے فرزندوں کو تحائف دینا پسند فرماتا ہے۔ یہ تمام تحائف ایک احاطہ رکھتے ہیں۔ یہ تحائف خُوشی سے عنایت کیے گئے ہیں۔ ہم کیسے جانتے ہیں؟ تین طریقے سے:1) مُجھے بار بار برکات سے نوازا گیا؛ 2) میں نے وہ دیکھا جو خُدا صدیوں سے اپنے لوگوں کے لیے کرتا آیا ہے؛ اور 3) یہ سب مُمکن ہونے کے لیے اُس کے کلام کے وعدے۔

Thoughts on Today's Verse...

God doesn't hold back on his goodness! In fact, the Father loves to give his children gifts. These gifts are all-encompassing. These gifts are gladly given. How do I know? Three ways:

  1. We have been repeatedly blessed.
  2. We can see what God has done to bless his people through the centuries.
  3. God's Scriptures promises this to be true.

God does not withhold from us! But, what happens if I am not blameless? On our own, none of us are, yet in Christ, God sees us as his blameless children if we keep pursuing Jesus (Colossians 1:21-23).

میری دعا

باپ، میں اُن تمام برکات کے لیے تیرا شُکر ادا کرتا ہُوں جو تُو نے میری زندگی میں اُنڈیلی ہیں۔ میں آج ناموں کے ساتھ اُن کی فہرست بنانا چاہتا ہُوں۔ ( جن چیزوں کے لیے آپ شُکر گزار ہیں آپ خُود اُن کی فہرست تیار کریں)۔ باپ سب سے بڑھ کر، تیرے بیٹے اور میرے خُداوند، یسُوع کے تحفہ کے لیے تیرا شُکرہو۔ اُس کے نام سے مانگتا ہُوں۔ آمین۔

My Prayer...

Father, I want to thank you for the many blessings you have poured into my life. I want to list several of them by name today. (Make your own list of things for which you are thankful.) Thank you most of all Father, for the gift of your Son and my Savior, Jesus. In his name I pray. Amen.

آج کی آیت پر دعا اور خیالات فل وئیر لکھتے ہیں

Today's Verse Illustrated


Inspirational illustration of زبُور 84 آیت نمبر 11

اظہارِ خیال